شہ سرخیاں

مرحوم میجر اسحق محمد کی 35 ویں برسی نہائیت عقیدت و احترام کے ساتھ منائی گئی

لودہراں( )اب وہ وقت دو ر نہیں ہے کہ جا گیر داروں اورسرما یہ دارحکمرا ن لٹیروں سے محنت کش طبقہ اپنے حقوق لے کر رہے گا میجر اسحا ق محمد کی برسی پر شر کاء کا اظہا ر خیا ل ۔تفصیل کے مطابق گز شتہ رو ز چوہدری نورالحسن گجر کی رہائش گاہ پر مزدور کسان پارٹی کے بانی و رہنما مرحوم میجر اسحق محمد کی 35 ویں برسی نہائیت عقیدت و احترام کے ساتھ منائی گئی جس میں انقلابی دانشوروں، انقلابی شعراء اور مزدور وں،کسانوں نے بھر پور شرکت کرتے ہوئے بائیں بازو کے انقلابی رہنما میجر اسحق محمد کی فکر اور طبقاتی نظریہ پر اپنی تقاریر میں انتہائی عقیدت سے اظہار خیال کیا گیا اجلاس میں شرکاء سینکڑوں مزدوروں کسانوں نے بلند آواز اور نعروں کے ساتھ یہ عہد کیا کہ میجر صاحب کا انقلابی و طبقاتی جدوجہد کا راستہ پہاڑ کا راستہ ہے شرکاء میں راؤ اسماعیل ایڈوکیٹ ، کسان اتحاد کے ضلعی رہنما شیخ دلدار حسین ، چوہدری نورالحسن گجر ، راؤ عبدالستار، ڈاکٹر یاسر، مہر وقار حسین ،شوکت آکاش، پیپلز پارٹی شہید بھٹو کے رہنما موسیٰ سعید نے اپنی تقاریر میں اظہارکیا کہ آج دنیا بھر میں مظلوم عوام کا استعمال کیا جا رہا ہے ہمیں اپنی محنت کا معاوضہ نہیں ملتا کاشتکار بدحالی کا شکار ہیں اور ملٹی نیشنل کمپنیوں نے اپنے منافع کی غرض سے لوٹ مار جاری رکھی ہوئی ہے اجناس کے ریٹ نہ ہونے کے برابر ہیں جبکہ زراعت پر ہونے والے اخراجات بہت زیادہ ہیں جسکی وجہ سے مزدوروں کو کسانوں کو مسلسل پستی کی طرف دھکیلا جا رہا ہے انھوں نے اپنی تقاریر میں مزید کہا کہ آج اکثریت پھر اقلیت حکومت کر رہی ہے جبکہ اکثریتی طقبہ غلامی کی زنجیروں میں جکڑا ہوا ہے جو کہ مہنگائی کا اژدھا بن کر غریبوں کو نکل رہا ہے ان تمام مسائل کا حل صرف اور صرف ان مٹھی بھر سرمایہ داروں اور انکے سرپرست امریکہ سامراج سے چھٹکارہ حاصل کرنے میں ہی ہے ورنہ سرمایہ دار، جاگیر دار غریبوں کا خون کا آخری قطرہ بھی نچوڑ لیں گے ۔ اور آخری نوالہ بھی چھین لیں گے طبقاتی جدوجہد کے اصول کے تحت اور نظریہمیجر اسحا ق کے بتائے ہوئے نظریہ کے مطابق ہم پاکستانی ہی نہیں بلکہ دنیا بھر کے مزدوروں سے یکجہتی کر کے اس ملک سے ظلم ونا انصافی کا خاتمہ جاگیر دارو ں اور سرمایہ دارو ں ملٹی نیشنل کمپنیوں اور ان کے آقا امریکہ سامراج سے نجات حاصل کر سکتے ہیں مقر رین اپنے خطاب میں کہا کہ آج ملک میں کسی قسم کی جمہوریت نہیں ہے بلکہ چند گھرانوں کی جمہوریت ہے جنہوں نے پاکستان کے اندر لوٹ مار کا بازار گرم کر رکھا ہے ۔اور یہ سرمایہ دار حکمران اپنے کر توتوں اور کرپشن کی وجہ سے عوام میں ننگے ہو چکے ہیں جس قسم کے یہ الیکشن ملک میں ہوتے ہیں یہ صرف سرمایہ داروں کا کھیل ہے اور وہ محنت کشوں کی محنت کو لوٹنے اور استحصال کرنے کا کھیل ہے پاکستان کا سرمایہ ہمارا سرمایہ غیر ممالک کے بنکوں میں جمع کرادیا جاتا ہے پاکستان کے محافظ صرف ہم مزدورکسان اور طلبہ ہیں نہ کے یہ جاگیردار اور سرمایہ دار نہیں ہیں ان کی کرپشن اور دہشت گردی نے ملک پاکستان کو کھوکھلاکر کے رکھ دیا ہے ہر طرف بے اعتمادی کی فضا رہے مقررین نے کہا کہ آج تو سپریم کورٹ آف پاکستان نے بھی یہ اعتراف کرتے ہوئے کہ دیا ہیں کی عوام کا عد لیہ سمیت تمام آدارو ں سے اعتماد اٹھ چکا ہے مقررین کے خطاب کے بعد انقلا بی شعرا شوکت اکا ش ، عمرا ن شارب ، سوجھل بخا ری ، نے فیض احمد فیض اور حبیب جا لب کا کلا م پیش کر ے اجلا س کے شرکا سے خوب دا د حا صل کی تقریباََ تین گھنٹے اجلا س جا ری رہنے کے بعد اختتا م پذیرہوا ۔

Share this

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Powered by Dragonballsuper Youtube Download animeshow