شہ سرخیاں

نوجوان کو اغواء کر کے قتل کر کے نعش ساہیوال نہر میں پھینک دی

پاکپتن (ڈسٹر کٹ رپورٹر) طلاق نہ لینے کی رنجش پر چار افرادنے نوجوان کو اغواء کر کے قتل کر کے نعش ساہیوال نہر میں پھینک دی ، سات روز بعد نعش ملنے پر ورثاء کا نعش سڑک پر رکھ کر پاکپتن میں ریلوے کراسنگ بند کر کے شدید احتجاج ،تھا نہ فرید نگر پولیس کے خلاف سخت نعرے بازی۔ بتا یا گیاہے کہ ملزم نذیر احمد کے بیٹے عمر کی شادی مقتول قدیر کی بہن سے ہوئی تھی ملزم نذیر خاتون کو کہتا تھا کہ بیٹے سے طلاق لو طلاق نہ لینے کی رنجش پر ملزم نذیر احمد نے تین ساتھیوں کے ہمرا ہ 22 سالہ قدیر کو15.10.16 کو گھر سے اغواء کر کے لے جا کر ساہیوال میں قتل کر کے نوجوان کی نعش نہر میں پھینک کر ملزمان فرار ہو گئے نہر میں لاوارث نعش تیرتی دیکھ کر تھا نہ غلہ منڈی پولیس نے نکا ل کر تدفین کر دی ، سات روز بعد نعش شناخت ہونے پر ورثاء نے ساہیوال سے نعش لاکر جنرل بس اسٹینڈ کے سامنے نعش رکھ کرسڑک پر ٹائروں کو آگ لگاتے ہوئے ساہیوال روڑ،ریلوے کراسنگ اور ہسپتال روڑ ریلوے کراسنگ کر بند کرد یا ،جس سے شہر کی ٹریفک اور ایمبولینسوں کی آمدورفت مفلوج ہو کر رہ گئی جس سے شہریوں کوسخت دشواری کا سامنا کر نا پڑ رہا ہے ،مقتول قدیر کے ورثاء نے تھا نہ فرید نگر ایس ایچ او کیخلاف شدید احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ پولیس سست روی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ہمارے ملزمان کو گرفتار نہیں کر رہی ہے ، اگر ملزمان گرفتار نہ ہوئے تو ہمیں خدشہ ہے کہ ملزمان ہمیں بھی قتل کردیں گے۔۔۔۔

Share this

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Powered by Dragonballsuper Youtube Download animeshow